اوورسیز پاکستانی کیخلاف 4 سال بعد نیب انکوائری بند، اسلام آباد ہائی کورٹ برہم

بغیر ثبوت اوورسیز پاکستانی سرمایہ کار کیخلاف نیب کاروائی بدنیتی ہے، عدالت۔ فوٹو:فائل

 اسلام آباد: نیب نے 4 سال بعد اوورسیز پاکستانی کیخلاف انکوائری بند کردی۔

ایکسپریس نیوزکے مطابق  پاکستان میں کروڑوں روپے کی سرمایہ کاری کرنے والے اوورسیز پاکستانی کیخلاف 4 سال بعد نیب انکوائری بند کردی گئی ہے، اوورسیز پاکستانی راجہ ظفر عباسی نے 74 کروڑ کی سرمایہ کاری کی جس پر نیب نے انکوائری شروع کردی تھی۔

اسلام آباد ہائیکورٹ نے اوورسیز پاکستانی کیخلاف نیب پنڈی کی کاروائی غیر قانونی قرار دے دی اور نیب کی کاروائی کو بیرونی سرمایہ کاروں کے اعتماد میں کمی کا ذمہ دار قرار دے دیا۔

عدالت کا کہنا تھا کہ بغیر ثبوت اوورسیز پاکستانی سرمایہ کار کیخلاف نیب کاروائی بدنیتی ہے، نیب حکام نے اوورسیز پاکستانی کو تین سال الجھا کر آخر میں انکوائری بند کردی، نیب حکام نے اوورسیز پاکستانی کیخلاف کاروائی کرکے ادارے کا قیمتی وقت ضائع کیا۔

 

About Express News

Avatar

Check Also

جمہوریت اور سسٹم کی بے بسی

ملک جس قسم کے مالیاتی بحران کا شکار ہے، اس کا تقاضا ہے کہ غیرترقیاتی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے