سعودی عرب میں غیر ملکیوں کی ملازمتوں پر پابندی کا نیا قانون نافذ

نئے قانون کے تحت صرف سعودی شہری ہی شاپنگ مالز میں ملازمت کے اہل ہوں گے

ریاض: سعودی حکومت نے ملک میں غیر ملکیوں کی ملازمتوں پر پابندی سے متعلق نیا قانون نافذ کردیا ہے۔

سعودی وزیر برائے افرادی قوت و سماجی ترقی احمد بن سلیمان نے ملک میں 3 نئے لیبر قوانین کے نفاذ کا اعلان کردیا ہے جس کے مطابق ملک میں نوکریوں کے لیے سعودی شہریوں کو ترجیح دی جائے گی جب کہ نئے قانون کے تحت 51 ہزار سعودی شہریوں کو ملازمتیں فراہم کی جائیں گی۔

نئے قانون کے تحت صرف سعودی شہری ہی شاپنگ مالز میں ملازمت کے اہل ہوں گے تاہم صرف کچھ عہدے اس قانون سے مستثنیٰ ہوں گے، ان عہدوں سے متعلق تفصیلات نہیں بتائی گئیں۔

اس کے علاوہ سعودی ریسٹورانٹ، کیفے اور سپر مارکیٹ میں بھی سعودی شہریوں کو ترجیح دی جائے گی تاہم نئے قوانین پر عمل درآمد نہ کرنے کی صورت میں جرمانے عائد کیے جائیں گے۔

About Express News

Avatar

Check Also

اسکول میں آسمانی بجلی گرنے کی ویڈیو وائرل، کمزور دل افراد نہ دکھیں

واشنگٹن : امریکی اسکول کے سامنے نصب درخت اچانک آسمانی بجلی کی زد میں آکر …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے