پاکستان کیلئے کھیلنے کا شوق لیکن غربت آڑے آگئی

فٹبال کی دنیا پاکستان بھی بہت آگے جاسکتا ہے لیکن 16 سالہ عمر جیسے بچوں کو آگے لانا ہوگا جو بنا وسائل فٹبال کی تیاری کررہے ہیں اور ساتھ ہی دیگر بچوں کی بھی تربیت کررہے ہیں تاکہ پاکستان کا نام روشن کریں۔

اے آر وائی نیوز نے کراچی کی پرانی سبزی منڈی میں مقیم ایسے بچے کو ڈھونڈ نکالا ہے جس کی عمر تو 16 سال ہے لیکن ارادے کسی چٹان جیسے مضبوط ہیں۔

عمر ویسے تو چپس کا کیبن لگاتے ہیں تاکہ گھر کا خرچ چلاسکیں اور فٹبال کھیلنے کا شوق پورا کرنے کےلیے کٹ اور شوز خرید سکیں۔

عمر نے میدان میں فٹبال کھیلنے آتا ہے تو محلے کے دیگر بچوں کو بھی ساتھ لاتا ہے تاکہ انہیں فٹبال سکھاسکے۔

نوجوان نے اے آر وائی نیوز سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ پرانی سبزی منڈی میں ایسا کوئی گراؤنڈ موجود نہیں جہاں فٹبال کھیلی جاسکی، یہاں صرف اور صرف مٹی ہےجو کسی بچے کے زخمی ہونے کا باعث بھی بن سکتی ہے۔

انہوں نے بتایا کہ ایک دفعہ ایک اکیڈمی میں گیا تھا جہاں انڈر 15 کےلیے ملائیشیا جانے کےلیے ٹرائل ہورہے تھے لیکن میں نہیں جاسکا کیوں کہ ڈیڑھ لاکھ روپے چاہیے تھے۔

عمر نے کہا کہ کوئی سپورٹ نہیں کرتا لہذا میری وزیراعظم عمران خان اور پاکستان فٹبال فیڈریشن سے درخواست ہے کہ مجھے اور مجھ جیسے ٹیلنٹ کو سپوڑٹ کریں تاہم بھی اپنی محنت سے پاکستان کا نام روشن کرسکیں۔

Comments

About Ary News

Avatar

Check Also

باغی سپر لیگ نے یورپی فٹبال کی یکجہتی میں دراڑ ڈال دی

15فاؤنڈنگ سائیڈزکو3.5بلین یوروصرف انفرااسٹرکچرکیلیے ملیں گے،شائق کا سوچیں،برطانوی وزیر اعظم۔ فوٹو: فائل پیرس:  یورپی فٹبال …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے