چقندر کے حیرت انگیز فوائد

چقندرہم بہت سے طریقوں سے کھا سکتے ہیں خاص طور پر یہ سلاد میں استعمال ہو تا ہے اور اس کا غذائیت سے بھرپورجوس بھی کافی پسند کیا جاتا ہے۔

فائبر، فولیٹ، میگنیز، پوٹاشیم، آئرن اور وٹامن سی سے بھرپور چقندر متعدد جسمانی امراض سے تحفظ فراہم کرتا ہے۔

غذائیت سے بھرپور چقندر کے فوائد جاننے کے بعد یقینا آپ اسے اپنی روزانہ کی خوراک میں شامل کیے بغیر نہیں رہ پائیں گے۔

جسمانی توانائی بڑھائے

نائٹرک آکسائیڈ کی بدولت خون کی شریانیں کشادہ ہوتی ہیں، اس سے مسلز کو زیادہ آکسیجن ملتی ہے جو کہ جسمانی توانائی کو دیر تک برقرار رکھنے میں مددگار ہے۔

ایک تحقیق کے مطابق چقندر کا جوس نکال کر پینا جسمانی مشقت کے کاموں کے لیے توانائی بڑھاتا ہے۔

دماغی طاقت کے لیے مفید

مسلز کو زیادہ آکسیجن کی فراہمی کے ساتھ ساتھ چقندر دماغ کو بھی زیادہ آکسیجن پہنچاتا ہے۔

قبض دور کرنے میں مددگار

ایک کپ چقندر میں ساڑھے 3 گرام فائبر ہوتی ہے اور یہ جز قبض کی روک تھام میں مدد دیتا ہے۔

نہ گھلنے والا فائبر غذا کو تیزی سے غذائی نالی سے گزرنے میں مدد دیتا ہے اور بہت جلد خارج بھی کردیتا ہے، قبض کا شکار رہنے والوں میں بواسیر کا خطرہ بھی زیادہ ہوتا ہے، چقندر اس موذی مرض سے بھی تحفظ فراہم کرسکتا ہے۔

ایک تحقیق میں بتایا گیا کہ پرانی قبض یا کم فائبر والی غذا بواسیر کا خطرہ بڑھاتی ہے جس سے بچاﺅ کے لیے زیادہ فائبر والی غذائیں جیسے چقندر فائدہ مند ہے۔

حاملہ خواتین کے لیے مفید

ڈاکٹرز حاملہ خواتین کو چقندر کھانے کا مشورہ دیتے ہیں کیوں کہ اس میں بڑی تعداد میں آئرن موجود ہوتا ہے جو ریڈ بلڈ سیلز بنانے میں مددگار ثابت ہوتا ہے اور اکثر حاملہ خواتین کے اندر ان کی کمی ہوجاتی ہے۔

About Bol News

Avatar

Check Also

سحر و افطار میں کتنا پانی پینا چاہیے؟

انسان کے جسم میں 50 سے 70 فیصد حصہ پانی کا ہوتا ہے، سانس سے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے