‘کے الیکٹرک کو زائد منافع کے پیسے عوام کو واپس کرنے چاہئیں’ –

معاون خصوصی برائے توانائی تابش گوہر نے کہا ہے کہ کےالیکٹرک نےجوبھی زائدمنافع کمایا اس ‏کےپیسےواپس ہونےچاہئیں،25ارب روپےکےالیکٹرک کے کھاتوں میں عوام کے ہیں جو انہیں واپس ‏کرنے چاہئیں۔

اے آر وائی نیوز کے پروگرام پاور پلے میں گفتگو کرتے ہوئے تابش گوہر نے کہا کہ آئی پی پیز ‏کےساتھ مہنگے معاہدوں کاخمیازہ آج بھی ہم بھگت رہےہیں ہم بھی چاہتےہیں شنگھائی الیکٹرک ‏کےالیکٹرک کی باگ ڈور سنبھال لے۔

تابش گوہر نے کہا کہ بجلی کی قیمتوں میں150فیصداضافہ معاہدےکی بھاری قیمت ہوگی، ‏کےالیکٹرک کے ذمے 150ارب روپےمعاف کرنابھی بھاری قیمت ہوگی، ماضی میں بھی کےالیکٹرک ‏کاکہناتھاکہ کلابیک قانون کااطلاق ان پر نہیں ہوتا، نیپراکوتعین کرناچاہیےکہ کےالیکٹرک نےجومنافع ‏اٹھایاعوام پرمنتقل کرے۔

انہوں نے کہا کہ کےالیکٹرک کی طرف عوام کےپیسےہیں توانہیں اداکرنےچاہئیں، حکومت کے ذمے ‏پیسے ہوتےہیں تو کےالیکٹرک ادائیگی کامطالبہ کرتاہے، کےالیکٹرک کےساتھ معاہدہ کمرشل بنیادوں ‏پرہوگافوری ادائیگی ہوگی، کے الیکٹرک کو اضافی450میگاواٹ دے رہے ہیں،معاہدہ ابھی نہیں ہوا، ہم ‏کےالیکٹرک کو450میگاواٹ بجلی دےرہےہیں لیکن وہ نہیں لےرہے۔

معاون خصوصی نے کہا کہ کےالیکٹرک معاہدےپردستخط نہیں کررہادوسری طرف لوڈشیڈنگ بھی ‏کررہاہے، 4سال سے معاہدہ لٹکاہواہےکہ شنگھائی الیکٹرک آرہی ہے، کےالیکٹرک پرمنحصرہےکہ ‏معاہدےپرکب دستخط کیے جاتے ہیں، کےالیکٹرک سے2015میں مستعفی ہوگیاتھاکوئی شیئرنہیں ہیں۔

Comments

About Ary News

Avatar

Check Also

وزیراعظم عمران خان کی عوام پر مزید ٹیکس کا بوجھ نہ ڈالنے کی ہدایت

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان نے عوام پر مزید ٹیکس کا بوجھ نہ ڈالنے کی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے